2

Best Top 37 Sad Urdu Poetry-2 Lines Udas Shayari

اداس

اداس یعنی غمگین ہونا روزمرہ زندگی میں ایسے بہت سے لمحات آتے ہیں جو انسان کو بہت خوش بھی کرتے ہیں اور آپ نے اکثر سنا ہوگا کہ جہاں لفظ خوشی آتا ہے ادھر غم کا بھی ساتھ ہی ذکر بھی ہوتا ہے۔زندگی میں ہزاروں خوشیاں آتی ہیں تو ساتھ ہی غم بھی لازمی آتے ہیں خوشی کے لمحات میں انسان طرح طرح سے اپنی خوشیوں کا اظہار کرتا ہے تو اسی طرح غم کا اظہار بھی ہوتا ہے جس میں انسان اپنی تکلیف کو خاموشی کے ساتھ گزار رہا ہوتا ہے اس کیفیت کو ہم اداسی بھی کہہ سکتے ہیں اور لفظ اداس بھی اسی اداسی سے نکلا ہے۔

اداسی کئی طرح سے ہو سکتی ہے انسان جس سے بے  پناہ محبت کرتا ہے جس کے بغیر جینے کا تصور بھی ناممکن ہوتا ہے قسمت اس انسان سے ہمیں اتنا دور کر دیتی ہے کہ ہمیں اس کے بغیر جینا پڑتا ہے تو اس کیفیت کو ہم کسی پر ظاہر نہیں کر سکتے اور نہ ہی ہم چاہ کر بھی خوش ہونے کا دکھاوا کر سکتے ہیں کیونکہ جب تک ہماری روح اندر سے خوش نہیں ہوگی ہم چاہ کر بھی زبردستی اپنے چہرے پر خوشی کو سجا کر نہیں رکھ سکتے اس کیفیت میں انسان خاموش رہتا ہے بلا وجہ کسی سے بات نہیں کرتا اپنے آپ میں رہنا پسند کرتا ہے اس کیفیت کو ہم اداسی کا نام دیتے ہیں۔خوشی اور اداسی کا تعلق سیدھا ہماری روح اور دل کے ساتھ جڑا ہے اور اس خوشی اور دکھ کو ظاہر ہمارا چہرہ کرتا ہے اگر ہمارا دل اندر سے خوش اور روح پر سکون ہے تو ہمارا چہرہ بھی خوش اور پر سکون نظر آئے گا اور اگر ہم اندر سے خوش نہیں ہیں ہماری روح بے چین ہے تو ہمارا چہرہ بھی مرجھایا ہوا نظر آئے گا بس اسی کیفیت کا نام اداسی ہے۔

آپکی اداسی کی عکاسی کرنے کے لئے اداسی پر بہت اچھے الفاظ ہماری اس ویب سائیٹ پر موجود ہیں آپ سے گزارش ہے کہ ہماری ویب سائیٹ کو خود بھی وزٹ کریں اور اسے اپنے دوستوں کے ساتھ بھی شئیر کریں اور براہ مہربانی کمنٹ سیکشن میں اپنی رائے کا اظہار ضرور کریں۔شکریہ

میں بھی بہت عجیب ہوں اتنا عجیب ہوں کہ بس


خود کو تباہ کر لیا اور ملال بھی نہیں

mein bhi bohat ajeeb hon itna ajeeb hon

ke bas

khud ko tabah kar liya aur malaal bhi nahi

محبت کرنے کی تجارت بھی انوکھی ہے


منافع چھوڑ دیتے ہیں خسارے بانٹ لیتے ہیں

mohabbat karne ki tijarat bhi anokhi hai

munafe chore dete hain khasaray baant letay hain

نبیل, عینِ عشق میں بھی اِک ترامیم ہونی چاہیے


کھیل کے دل توڑنے کی نہیں موڑنے کی ریت ہونی چاہیے

nabeel, ain ishhq mein bhi ik tarameem honi
chahiye


khail ke dil tornay ki nahi mornay ki rait

honi chahiye

تو بھی اے شخص کہاں تک مجھے برداشت کرے


بار بار ایک ہی چہرہ نہیں دیکھا جاتا

to bhi ae shakhs kahan tak mujhe bardasht kere

baar baar aik hi chehra nahi dekha jata

یہ مکتب کا پڑھا سب ہی بھلا دیتی ہوں


زندگی اپنا سبق خود ہی سکھا دیتی ہے



yeh maktab ka parha sab hi bhala deti hon


zindagi apna sabaq khud hi sikha deti hai


مِل رہا ہے٬ نہ کھو رہا ہے تُو

کتنا دلچسپ ہو رہا ہے تو

mil raha hai? nah kho raha hai too

kitna dilchasp ho raha hai to

‏اپنے لہجے پہ غور کر کے بتا


لفظ کتنے ہیں، تیر کتنے ہیں

apney lehjey pay ghhor kar ke bta

lafz kitney hain, teer kitney hain

تم رکھ نہ سکو گے میرا تحفہ سنبھال کر


ورنہ دے دوں روح جسم سے تجھ کو نکال کر

tum rakh nah sako ge mera tohfa sambhaal kar

warna day dun rooh jism se tujh ko nikaal kar

پھر یوں ہوا کے رفتہ رفتہ ہوگئی بے معنی

میری بات بھی.. میری ذات بھی

phir yun hwa ke rafta rafta hogayi be maienay

meri baat bhi. . meri zaat bhi

تو نے دیکھا ہی نہیں کبھی ساتھ مرے چل کے

میں ہوں تنہائی کا بھی ساتھ نبھانے والا

to ne dekha hi nahi kabhi sath marey chal ke

mein hon tanhai ka bhi sath nibhanay wala

جو باتیں پی گیا تھا میں

وہ باتیں کھا گئیں مجھ کو

jo baatein pi gaya tha mein

woh baatein kha gayeen mujh ko

یونہی تو نہیں ھوتیں بِھیڑ جنازوں میں

ہر شخص اچھا ھے چلے جانے کے بعد

yuhin to nahi hotin bheer jnazon mein

har shakhs acha he chalay jane ke baad

یادوں کے پاؤں ہی نہیں ورنہ

تیری یادوں کے پاؤں پڑ جاتے

yaado ke paon hi nahi warna

teri yaado ke paon par jatay

سلگ رہا ہوں کئی دن سے اپنے ہی اندر میں

اب جو لب کھولوں گا تو بہت تماشا ہو گا

sulag raha hon kayi din se –apne hi andar mein

ab jo lab kholon ga to bohat tamasha ho ga

جو سجائے رکھتے ہیں ہونٹوں پہ ہنسی کی کِرن

نہ  جانے  رُوح  میں  کِتنے  شگاف  رکھتے  ہیں


jo sajaye rakhtay hain honton pay hansi ki k
ِrn

nah jane rooh mein k
ِtne shagaaf rakhtay hain

رات بھی ، نیند بھی ،کہانی بھی🌚

ہائے....! کیا چیز ہے جوانی بھی💔🥀


raat bhi, neend bhi, kahani bhi

haae. .. .! kya cheez hai jawani bhi

میرا کیا بنے گا صاحب

تم تو عادی ہو بھول جانے کے


mera kya banay ga sahib

tum to aadi ho bhool jane ke

زندگی میں ایک بار محبت ضرور کرنی چاہیئے💖

تاکہ علم ہو جائے کہ کیوں نہیں کرنی چاہیے🔥💔

zindagi mein aik baar mohabbat zaroor karni
chahiye
💖

taakay ilm ho jaye ke kyun nahi karni chahiye
🔥💔

تم کوئی بات کیوں نہیں کرتے

پھر کوئی بات ہو گئ ہے کیا


tum koi baat kyun nahi karte

phir koi baat ho gai hai kya

ہم تو تیری کہانی لکھ آئے

تو نے لکھا ہے امتحان میں کیا


hum to teri kahani likh aaye

to ne likha hai imthehaan mein kya

جن کے جانے سے جان جاۓ

ہم نے ان کا جانا بھی دیکھا ہے


jin ke jane se jaan jaye ?

hum ne un ka jana bhi dekha hai

*لہجے  سے اُٹھ رہی تھی داستانِ  درد،* 

*چہرہ بتا رہا تھا کہ سب کُچھ گنوادیا،*


* lehjey se a
ُth rahi thi dastanِ dard, *

* chehra bta raha tha ke sab k
ُchh gnwadya, *

اک تیرا ہجر جو بالوں میں سفیدی لایا 

    اک تیرا عشق جو سینے میں جواں رہتا ہے


ik tera hijar jo balon mein safedi laya

ik tera ishhq jo seenay mein jawaa rehta hai

جب تنہائیاں عروج پر ہوں

تب دلاسے عذاب لگتے ہیں

jab tanhaiiyan urooj par hon

tab dilasay azaab lagtay hain

سنا ہے ہر بات کا جواب رکھتے ہو تم

کیا تنہائی کا بھی علاج رکھتے ہو تم


suna hai har baat ka jawab rakhtay ho tum

kya tanhai ka bhi ilaaj rakhtay ho tum

پتہ نہیں کتنا ناراض ھے وہ مجھ سے

 خوابوں میں بھی ملتا ھے تو بات نہیں کرتا

pata nahi kitna naraaz he woh mujh se

khowaboon mein bhi milta he to baat nahi karta

تیرے آنے کی کیا امید مگر

کیسے کہدوں کہ انتظارنہیں


tairay anay ki kya umeed magar

kaisay keh dun ke intzar nhi

اِک  تُو  کہ  مِری ذات کا  حِصّہ  رہے  گا  تُو

اِک مَیں کہ تِری ذات کو ترسُوں گا عُمر بَھر


ik too ke m
ِri zaat ka hissa rahay ga too

ik mein ke t
ِri zaat ko tarsun ga umar Bhar

پھر یوں ہوا کہ زمانے کی بے حسی دیکھ کر 

مسکراہٹ اوڑھ لی گئی , درد چھپا لیا گیا۔۔۔


phir yun sun-hwa ke zamane ki be hisi dekh kar

muskurahat ourh li gayi, dard chhupa liya gaya.

ناسخ غمِ فرقت میں ہے یہ حال ہمارا

جب کھنچتے ہیں آہ تو آتا ہے جگر ساتھ


Nasikh gham e furqat mein hai yeh haal hamara

jab khench ty hain aah to aata hai jigar sath

پسِ پردہ بھی تکلم سے گریزاں رہنا،

لوگ آواز سے تصویر بنا لیتے ہیں


pass parda bhi takalum se gorezan rehna ,

log aawaz se tasweer bana letay hain

💔زنجیروں سے با ندھ کر ہمیں💔 


💔لفظو ں ۔۔۔سے مارا گیا۔💔


💔zangeron  se bandh kar hamain💔

💔lafzon. .. se mara gaya. 💔

اک بار هی ھوتی ھے ازالہ نہیں ھوتا

یہ سچ ھے محبت میں حلالہ نہیں ھوتا۔


ik baar h
hoti he azaala nahi hota

yeh sach he mohabbat mein halala nahi hota .

*_چراغ سب کے بجھیں گے_*


*_ہوا کسی کی سگی نہیں🖤_*

* _charagh sab ke bujheen ge _ *


* _hawa kisi ki sagi nahi_ *

پھر مختصر کردی گفتگو اس نے ۔

پھراس کے رابطے میں آگیا کوئی ۔🖤

phir mukhtasir kar di guftagu is ne .

phras ke raabtey mein agaya koi.
🖤

کبھی یک بیک توجہ ، کبھی دفعتاً تغافل🍁

مجھے آزما رہا هے کوئی رخ بدل بدل کر🥀

kabhi yak back tawajah, kabhi dafatan taghaful

mujhe aazma raha hao koi rukh badal badal kar

ہم نے سمیٹے ہیں درد دنیا کے

 تم سے ایک ہم نہ سمبھالے گئے

hum ne samete hain dard duniya ke

tum se aik hum nah sabhaly gaye

سونے والے سمجھ نہیں سکتے

جاگنے والوں کا مسئلہ کیا ہے

sonay walay samajh nahi satke

jaagne walon ka masla kya hai

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں